سفیرِ امن و سکوں بن کے آئے عید الفطر
  
احمد علی برقیؔ اعظمی

سفیرِ امن و سکوں بن کے آئے عید الفطر
دلوں سے سب کے کدورت مِٹائے عیدالفطر

نقوشِ بُغض و حسد کو مِٹائے عید الفطر
دلوں میں شمعِ محبت جلائے عیدالفطر

جو غمزدہ ہیں اُنھیں آکے شادکام کرے
جو رورہے ہیں اُنھیں بھی ہنسائے عیدالفطر

بڑھائے حوصلہ پژمُردہ دل ہیں جو اُن کا
جو گِر رہے ہیں اُنھیں بھی اُٹھائے عیدالفطر

یہ استوار کرے رشتۂ محبت کو
ہے جو بھی عہدوفا وہ نِبھائے عید الفطر

دیارِ غیر میں ہیں جو ،رہیں خوش و خُرّم
وطن کی یاد کو دل سے بُھلائے عید الفطر

ہوں ہمکنار خوشی سے سبھی امیر و غریب
ہمیں بھی اور انھیں، راس آئے عید الفطر

خزاں کی زد میں نہ گلزارِ زندگی ہو کبھی
چمن میں اپنے نئے گل کِھلائے عیدالفطر

یہ سدِّباب کرے تیرگی کا اے برقی
کبھی نہ شمعِ اخوت بجھائے عیدالفطر

Copyright © 2014-15 www.misgan.org. All Rights Reserved.